فروشگاه اینترنتی هندیا بوتیک
آج: Wednesday, 20 November 2019

www.Ishraaq.in (The world wide of Islamic philosophy and sciences)

وَأَشۡرَقَتِ ٱلۡأَرۡضُ بِنُورِ رَبِّهَا

 

خدایا تیرے بندوں میں سے جو بندہ ھماری ان باتوں کو سنے کہ جو عدل کے تقاضوں سے ھمنوا ،اور ظلم و جور سے الگ ہیں جو دین و دنیا کی اصلاح کر نے والی اور شر انگیزی سے دور ہیں

 

تمام حمد اس اللہ کے  لئے ہے جو مخلوقات کی مشابھت سے بلند تر ،توصیف کرنے والوں کے تعریفی کلمات سے بالا تر ،اپنے عجیب وغریب نظم و نسق کی بدولت دیکھنے والوں کے

 

امیرالمومنین علیہ السلام کے وہ دعائیہ کلمات جو اکثر آپ کی زبان پر جاری رھتے تھے۔

تمام حمد اس اللہ کے لئے ہے جس نے مجھے اس حالت میں رکھا کہ نہ مردہ ھو ں ،نہ بیمار ،نہ میری رگوں پر برص کے جراثیم کا حملہ ھوا ،نہ برے اعمال (کے نتائج)میں گرفتار ھوں

 

میں گواھی دیتاھوں کہ وہ ایسا عادل ہے کہ جس نے عدل ھی کی راہ اختیار کی ہے اور ایسا حکم ہے جو (حق و باطل کو )الگ الگ کر دیتا ہے ۔

 

صفین کے موقع پر فرمایا:اللہ سبحانہ تعالی نے مجھے تمہارے امور کا اختیا ر دے کر میرا حق تم پر قائم کردیا ہے ،اور جس طرح میرا تم پر حق ہے ،ویسا ھی تمھارا بھی مجھ پر حق ہے۔